Jump to content
sharib

بات کہنے کی نہیں ہے انہیں آسانی آج

Recommended Posts

سید اقبال رضوی شارب
 
بیف کے نام پہ ہوتی ہے جو من مانی آج
آہ کس درجہ کی ہے بے سر و سامانی آج
 
فکر  معیوب ، گراں لہجہ زمیں بوس الفاظ
کچھ بھرم عہدے  کا رکھ  منصبِ سلطانی آج  
 
ملک  میں حبس کے ماحول سے نالاں  ہیں جو
بات  کہنے کی نہیں ہے انہیں آسانی آج
 
عام شہری کی تو کیا بات ہے ،حالات  یہ ہیں
دودھ کی مکّھی ہیں جتنے بھی ہیں اڈوانی آج  
 
بعد مرنے کے بھی ماں بہنیں نہیں ہیں محفوظ 
کس قدر پست ہوئ فطرت انسانی آج
ان کے ہر فعل میں کچھ بغض و حسد ہے شارب
بس مرے سر سے گزر  جایگا پھر پانی آج
Edited by sharib

Share this post


Link to post
Share on other sites

Create an account or sign in to comment

You need to be a member in order to leave a comment

Create an account

Sign up for a new account in our community. It's easy!

Register a new account

Sign in

Already have an account? Sign in here.

Sign In Now


×